زرعی خبریں, مزید باغبانی

کھیرے، گھیا کدو، خربوزے اور تربوز کی ٹنل میں کاشت یکم سے شروع کرکے 15 دسمبر تک مکمل کرنے کی ہدایت

کاشتکاروں کو کھیرے، گھیا کدو، چپن کدو، کریلے، گھیا توری، حلوہ کدو، ٹماٹر، خربوزے اور تربوز کی پست ٹنل میں کاشت یکم سے شروع کرکے 15 دسمبر تک مکمل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے اور کہاگیاہے کہ ان اوقات میں بے موسمی سبزیوں کی براہ راست کاشت سے اچھی پیداوار حاصل کی جاسکتی ہے۔ محکمہ زراعت کے ترجمان نے بتایاکہ ایک میٹر اونچائی کی حامل پست ٹنل میں ان سبزیوں کی کاشت کیلئے پودوں اور قطاروں کافاصلہ ان سبزیوں کے پودوں کے پھیلائو کو مد نظر رکھتے ہوئے برقرار رکھنا انتہائی ضروری ہے ۔

انہوںنے بتایاکہ کھیرے کی کاشت کیلئے پودے سے پودے کا فاصلہ 30سینٹی میٹر ، گھیا کدو، چپن کدو، کریلا ،گھیا توری ،خربوزہ اور تربوز کا 45سینٹی میٹر جبکہ حلوہ کدو کا 50سینٹی میٹر ہونا ، قطاروں کا آپس میں فاصلہ کھیرا، چپن کدو، خربوزہ اور تربوزمیں 150سینٹی میٹر ، گھیا کدو ، کریلا ، گھیا توری اور حلوہ کدومیں 240سینٹی میٹرہونا ضروری ہے۔

انہوںنے کہا کہ ٹنل کے اندر کاشت کی گئی سبز یاں شدید سردی کے موسم میں سردی اور کورے کے اثر سے محفوظ رہتی ہیں کیونکہ پلاسٹک ٹنل کے اندر کا درجہ حرارت مناسب رہتا ہے نیز شدید سردی اور کورے کے باوجود ٹنل کے اندر پودوں کی بڑھوتری جاری رہتی ہے جس سے فصل جلد تیار اور اچھے داموں بکتی ہے۔

Send this to a friend